کرونا صورتحال سنگین،تین اضلاع میں دفاتر بند

گلگت بلتستان میں بڑھتی ہوئی کرونا لہر کے پیش نظر حکومت گلگت بلتستان نے سول سیکرٹریٹ اور گلگت، سکردو اور ہنزہ کے اضلاع میں سرکاری دفاتر میں 19 جولائی سے 25 جولائی تک بند کرتے ہوئے ورک فرام ہوم کی پالیسی نافذ کر دی ہے۔ محکمہ سروسز اینڈ جنرل ایڈمنسٹریشن سے جاری نوٹیفکیشن کے مطابق محکمہ داخلہ، صحت اور جی اے ڈی کے سیکرٹریز کے آفسز کم سے کم سٹاف کے ساتھ کھلے رہیں گے، اس دوران عوام سے ملاقاتیں نہیں ہونگی۔ اسی طرح مندرجہ بالا اضلاع میں انتظامیہ، پولیس اور صحت کے دفاتر بدستور اپنا کام جاری رکھیں گے تاہم انتہائی کم عملے اور کرونا ایس او پیز پر عملدرآمد یقینی بنائیں گے۔ نوٹیفکیشن کے مطابق تمام سیکرٹریز اور ہیڈ آف ڈیپارٹمنٹس آن لائن( فون کال ) دستیاب ہونگے اور مندرجہ بالا ہدایات پر عملدرآمد یقینی بنانے کے پابند ہونگے۔ یاد رہے کہ گزشتہ ایک ماہ کے دوران گلگت بلتستان میں کرونا وائرس کے پھیلائو میں خطرناک حدتک اضافہ ہو چکا ہے۔ جی بی میں کرونا کے زیر علاج مریضوں کی تعدا د ایک ہزار کے قریب پہنچ چکی ہے۔گلگت، سکردو اور ہنزہ میں متاثرین کی تعداد بڑھ رہی ہے۔ دوسری جانب کویڈ کے تیزی سے پھیلائو کے بائوجود حکومت اور انتظامیہ کی خاموشی سوالیہ نشان بن گئی ہے۔ عوام کی جانب سے ایس او پیز کی دھجیاں اڑائی جا رہی ہیں لیکن انتظامیہ ٹس سے مس نہیں۔ ضروری ماسک کے استعمال کے حکم پر کوئی عملدرآمد نہیں ہوا۔ شہریوں کی بڑی تعداد بغیر ماسک کے آزادانہ گھوم رہے ہیں، سماجی فاصلے کا فارمولا بھی ہوا میں اڑا دیا گیا ہے۔ عوام کی جانب سے کرونا ایس او پیز پر عملدرآمد نہ کرنے کی وجہ سے گلگت بلتستان میں کرونا وائرس تیزی سے پھیل رہا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں