وادی ہنزہ میں 22 سالہ شادی شدہ خاتون کی پراسرارموت کا معمہ حل ہوگیا

 وادی ہنزہ میں 22 سالہ شادی شدہ خاتون کی پراسرارموت کا معمہ حل ہوگیا۔ ہنزہ کے بالائی علاقے شمشال میں 22 سالہ خاتون کی موت کےبعد گھر والوں نے سسرالیوں پرشبہ ظاہر کیاتھا اور تھانہ گلمت میں درخواست جمع کرائی تھی جس پر تفتیش شروع کی گئی۔

پولیس نےخاتون کے شوہر ندیم شاہ، ساس ،سسر اور دیور فہیم شاہ سمیت 5 افراد کو حراست میں لیا جہاں دوران تفتیش ملزمان سسر اور دیور نے 22 سالہ لڑکی کو قتل کرنے کا اعتراف کرلیا۔ پولیس کاکہناہے کہ ملزمان نے بتایا کہ مقتولہ کو چائے بنانے کا کہا تھا جس پر اس نے انکار کیا اور گھر سے باہر نکل گئی، واپس بلانے تکرارہوئی اورپتھر مارا جو سرپرجا لگا جس کے بعد ا س کی لاش دریاکے کنارے چھوڑ آئے۔

تھانہ گلمت میں درج ایف آئی آر کے مطابق مقتولہ ادیبہ کی سات ماہ قبل ندیم شاہ سے شادی ہوئی تھی اور 6 جون کو مقتولہ ادیبہ کی لاش دریائے شمشال کے کنارے سے ملی تھی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں